10

یہ دنیا بڑی عجیب ہے

Xبسم اللہ الرحمٰن الرحیم 

یہ دنیا بڑی عجیب ہے کہ کسی کی خوشی کسی کی ترقی اور  کسی کا روشن مستقبل ہوتا دیکھنا گوارہ نہیں کرتی ہے اور پھر اسی کے برعکس غم تنزلی اور پریشان کن  حالات میں بھی  سہارا دینا پسند نہیں کرتی بلکہ اس سے کہیں اور دس قدم آگے بڑھ کر انسانیت سے گری ہوئی بات تو یہ کہ اس پر مزاق اور نکتہ چینیوں سے اپنی آخرت برباد کرتے ہیں کاش کہ ایسے لوگ ذرا ٹھنڈے دل سے سوچ پاتے اور اپنی آخرت کے سنوارنے پر لگ جاتے .

جیسا کہ اس آیت شریفہ میں ارشاد باری تعالیٰ ہے
یٰۤاَیُّہَا الَّذِیۡنَ اٰمَنُوا اجۡتَنِبُوۡا کَثِیۡرًا مِّنَ الظَّنِّ ۫ اِنَّ بَعۡضَ الظَّنِّ اِثۡمٌ وَّ لَا تَجَسَّسُوۡا وَ لَا یَغۡتَبۡ بَّعۡضُکُمۡ بَعۡضًا ؕ اَیُحِبُّ اَحَدُکُمۡ اَنۡ یَّاۡکُلَ لَحۡمَ اَخِیۡہِ مَیۡتًا فَکَرِہۡتُمُوۡہُ ؕ وَ اتَّقُوا اللّٰہَ ؕ اِنَّ اللّٰہَ تَوَّابٌ رَّحِیۡمٌ ﴿۱۲﴾
ترجمہ آیت بالا

اے ایمان والو ! بہت سارے گمانوں سے بچو ؛ کیوں کہ بعض گمان (یعنی بدگمانی) گناہ ہوتے ہیں اور ٹوہ میں نہ پڑا کرو اور نہ ایک دوسرے کی غیبت کیا کرو ، کیا تم میں سے کسی کو یہ بات اچھی لگے گی کہ وہ اپنے مرے ہوئے بھائی کا گوشت کھائے ؟ اس سے تم نفرت کرتے ہو ، اور اللہ سے ڈرتے رہو ، یقیناً اللہ توبہ قبول کرنے والے اور بڑے مہربان ہیں .

از عبید الرحمان عقیل ندویؔ 

اس پوسٹ پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں