عید کی خوشیاں اور ہم!

اہم پیغام سب کو معلوم ہونا چاہیےدیکھیں اور شیر کریں!

تحریر ۔عبد الحکیم ندوی
چند ایام میں ہم لوگ عید کی خوشیوں میں مگن ہونگے ہمارے گھروں کے بچے بچیاں سب عید کی خوشیوں میں مصروف ہونگے کیونکہ آجکل ہم لوگوں کا مزاج بن چکا ہے آج رمضان شروع ہوا کل سے عید کی خریداری شروع ہوجاتی ہے ایسے میں بھلا کون خوش نہ ہوگا اور بسا اوقات خوشیوں کی اس ریل پیل اور چہل پہل میں ہم دوسروں کو بھول جاتے ہیں ہم سمجھتے ہی نہیں کہ ہمارا بھائی کیسا ہے انکے گھرانے کے لوگ کسیے ہیں انکی عید ہماری طرح خوشیوں والی ہے یا وہ اضطراب و پریشانیوں میں مبتلا ہیں انکے بچے خوش ہیں یا بلک رہے ہیں ۔ ہم لوگوں کو سچ میں اسکی فرصت نہیں کہ غیروں کا خیال کریں ۔
ہماری غیرت مرچکی ہے ہم اندھے لنگڑے بہرے ہوچکےہیں ہماری عید خوشیوں سے پر ہوگی ہمارا فلسطینی، شامی، سیریائی و دیگر مظلوم بھائی اور انکے معصوم بچے کس طرح کی عید منائیں گے ہم سب اچھی طرح سے جانتے ہیں کہ وہ لوگ عید کی خوشیاں کیا ہر طرح کی خوشیوں کا نام بھول چکے آج ایسی حالت میں بھی کوئی انکا پرسان حال نہیں ہے کوئی انکے زخموں پر مرہم کرنے والانہیں
کہ کوئی ان سے بھی ذرا پوچھے کہ چند دنوں بعد عید ہے تم نے کیا تیاریاں کی ہیں تمہارے بچوں کی تیاریاں کیسی ہیں یا پھر چلو ہم سب ساتھ میں عید منائیں گے چلوں ہم بھائی بھائی گلے مل کر ہر خوشی و غم میں شریک ہوتے ہیں
آج انکے حالات روزانہ بد سے بدتر ہوتے جارہے ہیں انکے مظالم سن کر ہمارا کلیجہ منہ کو آجاتا ہے ان کے معصوموں کی صدائیں سن کر اپنی حالت پر رونا آتا ہے انکی بہن بیٹیوں کا حال معلوم کرکے شرمندگی کا احساس ہوتا ہے اور دل سے آہ نکلتی ہے اے میرے مولا ان درندوں کے جنگل میں کوئی صلاح الدین کوئی عمر بھیج دے کوئی انکا پرسان حال بھیج دے کوئی انکے زخموں پر مرہم کرنے والا بھیج دے کوئی ایسا مائی کا لال پیدا کردے جو امت مسلمہ کے غموں کو سمجھنے والا ہو کوئی تو ہو جو اس پرخطر ماحول میں مسلمانوں کی راہنمائی کرے کوئی تو ہو جو انکے عزائم کو پھر سے خیبر کے میدان فتح کرنے لائق بنادے ۔
آج ہم مسلمانوں کو جہاں ہر قدم پھونک کر رکھنے کی ضرورت ہے وہیں اپنے مسلمان بھائیوں کا ہر قدم پر پرسان حال بننے کی ضرورت ہے اور ہمیں چاہئے ہم سچا مسلمان بن جائیں
اور اپنی ہر خوشیوں میں ان بھائیوں کو نہ بھولیں انکو بھی اپنی ہر تہوار و عید میں یاد رکھیں ہر ممکن انکی مدد کے لئے تیار رہیں
اللہ ہماری راہنمائی فرمائے۔۔

اپنا تبصرہ بھیجیں