ایک میسیج پر تبصرہ!

اہم پیغام سب کو معلوم ہونا چاہیےدیکھیں اور شیر کریں!

تحریر – عبدالحکیم ندوی
چند دنوں سے ایک میسیج اسلامی نامی گروپوں میں ٹرینڈنگ میں چل رہا ہے اور میسیج بھی بھت پر اثر اور اصلاح معاشرہ اصلاح امت سے لبریز ہے تو میں نے سوچا کہ میں بھی اسے آپ لوگوں کی نظر کرتا ہوں شاید کڑوڑوں میں ایک کا تو بھلا ہوجائے کوئی ایک بھی اگر اس میسیج کے ذریعہ فحاشی سے باز آجاتا ہے تو ہماری محنت رنگ لے آئیگی وہ میسیج پڑھنے سے پہلے آپ چند باتیں بھی جان لیں کہ بالی ووڈ کے چند اداکار ایسے ہیں جنکی فلم ہر سال عید بقرعید وغیرہ پر ریلیز ہوتی ہیں اسکی وجہ صرف مسلمانوں کو عیاشی کی دعوت دینا ہے جیسے آپ جانتے ہیں کہ بالی ووڈ کی اکثر فلمیں جمعہ کو ریلیز ہوتی ہیں اسکی وجہ کیا ہے ؟؟
میں آپ کو بتاتا ہوں دراصل دنیا کی جتنی بھی فلم انڈسٹریز ہیں انکا وجود مسلمانوں کے مخالفت میں ہی آیا ابتداء سے وہ فلموں کے ذریعے مسلمانوں کے اخلاق کو فاسد کررہے ہیں فحاشی و عریانی عام کررہے ہیں اسلئے وہ مسلمانوں کے ہر مقدس تہوار اور مقدس ایام میں فلم ریلیز کرتے ہیں تاکہ ہزاروں میں کم ازکم ایک تو فاسد ہوگا ایک تو فلم دیکھنے جائیگا جبکہ آجکل جمعہ چھوڑکر اور عید کے دن فلم ہال میں اکثریت مسلمانوں کی ہوتی ہے
اسکے متعلق بالی ووڈ والوں سے جب دریافت کیا گیا تو انہوں نے یہ کہا کہ اس دن اسکی کسی دیوی کا جنم دن ہے یہ دن انکے لئے شبھ ہے وغیرہ وغیرہ بیکار باتیں انہوں نے بتائی ہیں جو کہ سراسر غلط ہے دراصل انکے مقاصد مذکورہ بالا ہیں جو یہودیوں کی نگرانی میں ہوتا ہے ۔
میں اسکے متعلق کبھی پوری تفصیل سے آپ کو آگاہ کرونگا فی الحال آپ وہ میسیج پڑھیں اور دوستوں کو آگاہ کریں۔
” ۲۵ کروڑ مسلمانوں میں سے ۲۵ لاکھ مسلمان عید پر فلم دیکھیں گے
ایک ٹکٹ کا دام =۲۰۰ روپئے،
۲۵ لاکھ ٹکٹ کا دام = ۲۰۰‌‌+۲۵۰۰۰۰۰ =۵۰۰۰۰۰۰۰۰
(پچاس کروڑ ہو جاتے ہیں)
یہی پچاس کروڑ ہم ہمارے مدرسوں یا مسجدوں میں خرچ کریں گے تو ہماری
مسجدوں اور مدرسوں کو پورے سال بھر کی ضرورت نہیں پڑیگی،، اور ہم عنداللہ ماجور بھی ہونگے
عید سے قبل اپنے دوستوں تک یہ میسیج ضرور پہونچائیں۔

3 تبصرے “ایک میسیج پر تبصرہ!

  1. عبدالحکیم ندوی نے کہا:

    السلام علیک !
    ایڈمن صاحب مندرجہ بالا کچھ فونٹ کٹے ہوئے ہیں جہاں سے ٢٥ کڑوڑ کی بات شروع ہوئی ہے جبکہ تبصرہ نظر وہی ہے۔
    نظر ثانی فرماکر ممنون ہوں!

  2. عقیل ندوی نے کہا:

    وعلیکم السلام ورحمتہ اللہ وبرکاتہ
    امید کہ اب مطمئن ہوگئے ہونگے……..؟

  3. عبدالحکیم ندوی نے کہا:

    جی اب قابل اطمینان ہے!
    شکریہ

اپنا تبصرہ بھیجیں